Select Language :

دانتوں سے خون نکل آئے :

سوال:    کیا وضو کرنے کے بعددانتوں سے خون نکلنے کی وجہ سے وضو ٹوٹ جاتا ہے؟(محمدشمس الدین التمش،مشیرآباد(

الجواب

خون کے نکلنے سے اس وقت وضو ٹوٹتا ہے ، جب کہ وہ بہنے کے درجہ میں آجائے ، اگر بہنے کے درجہ میں نہ ہو ، خون کاتھوڑا سا اثر ہو ، تو وضو نہیں ٹوٹے گا ۔چنانچہ فقہا نے لکھاہے:

’’ اگر کسی چیز کو چبایا جائے یا مسواک کی جائے اور اس میں خون کا اثر پایا جائے تو جب تک سیلان یعنی خون کے بہنے کی کیفیت نہیں پائی جائے ، وضو نہیں ٹوٹے گا ‘‘.(’’المتوضیء إذاعض شیئاًفوجدفیہ أثرالدم أواستاک بسواک فوجدفیہ أثرالدم لاینتقض مالم یعرف السیلان‘‘.)

’’ اگر تھوک میں خون آرہا ہو تو دیکھا جائیگا کہ غلبہ خون کا ہے یا تھوک کا ، اگر تھوک غالب ہو اور خون کم ہو تو وضو نہیں ٹوٹے گا ،اور خون غالب یا برابر ہو تووضو ٹوٹ جائے گا‘‘۔(’’وینقضہ دم من جرح بفمہ غلب علیہ البزاق أی الریق أوساواہ احتیاطاً‘‘۔((کتاب الفتاویٰ:۲؍۴۸)

کتب ورسائل

قرآن
حدیث
اسلامیات
سیرت رسولؐ
عقیدہ
فقہ
تصوف
تقریر

سوال/جواب

تمباکو کھانے کے بعد وضو:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
تمباکونوشی اورنسوارکشی سے وضوٹوٹتاہے یانہیں:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
وضوء کے فرائض وسنن
وضو میں واجبات
چہرہ کی حد کہاں سے کہاں تک ہے اور داڑھی کے غسل کاحکم
گنجے سروالے آدمی کے چہرے کی حدود کاحکم
پیشانی کے اوپرکے حصہ میں بال نہ ہوں تووضومیں چہرہ کہاں تک دھوناچاہیے
عورت کے ناک،کان میں سوراخ ہوتووضومیں پانی پہنچاناضروری ہے یانہیں

         آگے پڑھئے