Select Language :

پیشاب کی راہ سے جو سفید پانی نکلتا ہے وہ ناپاک اور ناقض وضوہے :

سوال :    ایک شخص کے پیشاب کی راہ سے سفید پانی نکلتا ہے اور پاجامہ کو لگ جاتا ہے تو وہ ناپاک ہو جائے گا ؟اور اس کپڑے کو پہن کر نماز پڑھ سکتاہے یا نہیں ؟بینوا توجروا۔

الجواب

پیشاب کی راہ سے جو سفید پانی نکلتا ہے وہ ناپاک ہے اور نجاست غلیظہ اور ناقض وضوہے۔بدن اور کپڑے پرلگ جائے توبدن اور کپڑا ناپاک ہو جائے گا لیکن ایک درہم کی مقدار(یعنی ہاتھ کی ہتھیلی کے برابر)معاف ہے۔اگردھونے کاوقت نہ مل سکااوراس کوپہن کرنمازپڑھ لی تونمازہوجائے گی۔بعدمیںدھولیناچاہئے۔

درمختارمیں ہے:

(و عفی )الشارع(عن قدر درھم )وإن کرہ تحریماً فیجب غسلہ و ما دونہ تنزیہاًفیسن وفوقہ مبطل فیفرض۔۔۔۔۔(وھو مثقال فی نجس کثف)لہ جرم(عرض مقعر الکف)وھو داخل مفاصل أصابع الید (فی رقیق مغلظۃ)الخ۔(در مختار مع الشامی: ۱؍۲۹۳،ھدایہ:۱؍۵۸باب الأنجاس،مالا بد منہ :ص ۱۹)فقط واللہ اعلم بالصواب (فتاویٰ رحیمیہ ۴؍۲۶۷ (

کتب ورسائل

قرآن
حدیث
اسلامیات
سیرت رسولؐ
عقیدہ
فقہ
تصوف
تقریر

سوال/جواب

تمباکو کھانے کے بعد وضو:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
تمباکونوشی اورنسوارکشی سے وضوٹوٹتاہے یانہیں:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
وضوء کے فرائض وسنن
وضو میں واجبات
چہرہ کی حد کہاں سے کہاں تک ہے اور داڑھی کے غسل کاحکم
گنجے سروالے آدمی کے چہرے کی حدود کاحکم
پیشانی کے اوپرکے حصہ میں بال نہ ہوں تووضومیں چہرہ کہاں تک دھوناچاہیے
عورت کے ناک،کان میں سوراخ ہوتووضومیں پانی پہنچاناضروری ہے یانہیں

         آگے پڑھئے