Select Language :

پیشاب کے مریض کے لیے کرسف کااستعمال اوروضو کامسئلہ:

سوال:    زیدکو بوجہ ضعفِ مثانہ قطرہ آنے کامرض ہے،و ہ پیشاب گاہ میں کرسف رکھتاہے اور کرسف اس قدراندررہتاہے کہ نظر بالکل نہیں آتااورحشفہ سے بھی پر ے رہتاہے،ایسی صورت میںوقت کے گذرنے پروضوجدیدکرے یااس وقت وضوکرے کہ جب قطرہ عضوسے نفوذکرکے سپاری میں آجاوے اورچونکہ کرسف اندررہتاہے اس کاترہونا معلوم نہیں ہوسکتا کہ کس وقت ترہوتاہے؟

الجواب

قال فی مراقی الفلاح:ومن بہ عذر کسلسل بول أو استطلاق بطن وانفلات ریح ورعاف دائم وجرح لایرقأ ولایمکن حبسہ بحشومن غیر مشقۃ یتوضأ لوقت کل صلوٰۃ آھ قال الطحطاوی:فیتعین علیہ ردہ متی قدر علیہ بعلاج من غیر مشقۃ وفی المضمرات عن النصاب بہ سلس بول فجعل القطنۃ فی ذکرہ ومنعہ من الخروج وھویعلم أنہ لولم یحش ظھر البول فأخرج القطنۃ وعلیھا بلۃ فھو محدث ساعۃ إخراج القطنۃ فقط وعلیہ الفتویٰ آھ۔(ص:۸۵)

اس سے معلوم ہواکہ کرسف احلیل میں رکھنے سے اگرقطرہ کااثر ظاہر کرسف پرظاہرنہ ہوتویہ شخص معذورنہیں ہے،اس کوہروقت وضو جدیدکرنالازم نہیں،لیکن اس کوچاہئے کہ کرسف اتنا لمبا رکھے کہ اس کاایک سراسوراخ ذکرکے متصل ہوجب تری اس سرے میں پہونچ جائے گی اس وقت وضوٹوٹ جائے گا ۔

۴؍ ذی الحجہ ۱۳۴۱؁ھ(امدادالاحکام جلد اول ص ۳۷۱و۳۷۲(
کتب ورسائل

قرآن
حدیث
اسلامیات
سیرت رسولؐ
عقیدہ
فقہ
تصوف
تقریر

سوال/جواب

تمباکو کھانے کے بعد وضو:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
تمباکونوشی اورنسوارکشی سے وضوٹوٹتاہے یانہیں:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
وضوء کے فرائض وسنن
وضو میں واجبات
چہرہ کی حد کہاں سے کہاں تک ہے اور داڑھی کے غسل کاحکم
گنجے سروالے آدمی کے چہرے کی حدود کاحکم
پیشانی کے اوپرکے حصہ میں بال نہ ہوں تووضومیں چہرہ کہاں تک دھوناچاہیے
عورت کے ناک،کان میں سوراخ ہوتووضومیں پانی پہنچاناضروری ہے یانہیں

         آگے پڑھئے