Select Language :

کان یا آنکھ میں سے پانی وغیرہ نکلے تو وضو ٹوٹتا ہے یا نہیں :

سوال:    اگر کان یا آنکھ میں درد و تکلیف ہو اور اس وقت کان یا آنکھ سے مواد یا پانی نکلے اور نکل کر باہر آجائے تو یہ ناقض وضو ہے یا نہیں ؟ایسی حالت میں نماز پڑھ لی ہو تو کیا حکم ہے ؟بینوا توجروا

الجواب

اگر کان یا آنکھ میں کچھ درد و تکلیف ہو اور اس وقت کان یا آنکھ سے مواد یا پانی خارج ہو اور ایسی جگہ تک آجائے کہ جس کا وضو یا غسل میں دھونا ضروری ہے تو اس سے وضو ٹوٹ جائیگااور وضو کئے بغیر نماز پڑھنا صحیح نہ ہوگاپڑھی ہوتواعادہ ضروری ہے اور اگرکچھ درد و تکلیف نہ ہو اور ایسے ہی پانی نکلے تو اس سے وضو نہیں ٹوٹتا۔

در مختار میں ہے:(لا ینقض لوخرج من أذنہ)ونحوھا کعینہ و ثدیہ (قیح)ونحوہ کصدیدوماء سرۃ و عین (لا بوجع و إن خرج بہ )أی بوجع (نقض)لأنہ دلیل الجرح۔(درمختارمع الشامی:۱؍۱۳۷)فقط واللہ اعلم بالصواب(فتاویٰ رحیمیہ:۷؍۱۲۸ و۱۲۹)

کتب ورسائل

قرآن
حدیث
اسلامیات
سیرت رسولؐ
عقیدہ
فقہ
تصوف
تقریر

سوال/جواب

تمباکو کھانے کے بعد وضو:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
تمباکونوشی اورنسوارکشی سے وضوٹوٹتاہے یانہیں:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
وضوء کے فرائض وسنن
وضو میں واجبات
چہرہ کی حد کہاں سے کہاں تک ہے اور داڑھی کے غسل کاحکم
گنجے سروالے آدمی کے چہرے کی حدود کاحکم
پیشانی کے اوپرکے حصہ میں بال نہ ہوں تووضومیں چہرہ کہاں تک دھوناچاہیے
عورت کے ناک،کان میں سوراخ ہوتووضومیں پانی پہنچاناضروری ہے یانہیں

         آگے پڑھئے