Select Language :

گھرسے وضوکرکے مسجدمیں آناافضل ہے:

سوال:    زیدکہتاہے کہ مسجدمیں آکروضوکرنے کے بجائے گھرسے وضوکرکے آنازیادہ ثواب ہے ، کیا زید کایہ قول صحیح ہے ؟بینواتوجروا۔

الجواب باسم ملھم الصواب

زیدکاقول صحیح ہے گھرسے وضوکرکے مسجدکی طرف آنے کی فضیلت احادیث میں آئی ہے۔

عن أبی ہریرۃ رضی اللّٰہ تعالیٰ عنہ قال: قال رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم : صلوٰۃ الرجل فی الجماعۃ تضعف علی صلوٰتہ فی بیتہ وسوقہ خمساً وعشرین ضعفاً وذلک أنہ إذا توضأ فأحسن الوضوء ثم خرج إلی المسجد لایخرجہ إلاالصلوٰۃ لم یخط خطوۃً إلا رفعت لہ بھا درجۃ وحط عنہ بھا خطیئۃ فإذاصلی لم تزل الملائکۃ تصلی علیہ مادام فی مصلاہ ،أللّٰھم صلِّ علیہ ،أللّٰھم ارحمہ، ولایزال أحدکم فی صلوٰۃ ما انتظرالصلوٰۃ۔(متفق علیہ(

وعن أبی أمامۃ رضی اللّٰہ عنہ قال: قال رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم: من خرج من بیتہ متطھراً إلی صلوٰۃ مکتوبۃ فأجرہ کأجرالحاج المحرم ومن خرج إلی تسبیح الضحیٰ لاینصبہ إلاإیاہ فأجرہ کأجرالمعتمروصلوٰۃ علی أثرصلوٰۃ لا لغوبینھماکتاب فی علیین‘‘۔(رواہ أحمدؒ وأبوداؤدؒ(

وعن عبداللّٰہ بن مسعود رضی اللّٰہ تعالیٰ عنہ (فی حدیث طویل) ومامن رجل یتطھرفیحسن الطھورثم یعمد إلی مسجد من ھذہ المساجد إلاکتب اللّٰہ لہ بکل خطوۃ یخطوھاحسنۃ ورفعہ بھادرجۃ وحط عنہ بھاسیئۃ۔(رواہ مسلمؒ(

وعن سھل بن حنیف مرفوعاً: من تطھرفی بیتہ ثم أتی مسجد قباء فصلی فیہ صلوٰۃکان لہ کأجرعمرۃ۔ (ابن ماجہ (

عقلاً بھی گھرسے وضوکرکے مسجدکی طرف چلنے کی فضیلت ظاہرہے اس لیے کہ اس میں مسجداورجماعت کااحترام ہے ۔کوئی شخص کسی دربارمیں حاضرہوناچاہے تواس کی عظمت کاتقاضہ ہے کہ گھرسے صاف ستھراہوکرچلے ،نہ یہ کہ دربارمیں پہنچ کرپانی تلاش کرے،یہ دربارکی عظمت کے خلاف ہے،جیساکہ حرم میں داخل ہونے والے کے لیے مواقیت سے احرام باندھنے کے حکم سے بھی بیت اللہ کی عظمت کااظہارمقصودہے۔

اس سے ثابت ہواکہ آج کل مساجدمیں جاکروضوکرنے کاجوعام دستورہوگیاہے یہ درست نہیں،البتہ مسافریامعذوروغیرہ کے لیے کوئی مضائقہ نہیں۔فقط واللہ تعالیٰ اعلم

۲۴؍ ربیع الاول ۸۷ھ؁ (احسن الفتاویٰ:۲؍۱۱۔۱۲ )  

کتب ورسائل

قرآن
حدیث
اسلامیات
سیرت رسولؐ
عقیدہ
فقہ
تصوف
تقریر

سوال/جواب

تمباکو کھانے کے بعد وضو:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
تمباکونوشی اورنسوارکشی سے وضوٹوٹتاہے یانہیں:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
وضوء کے فرائض وسنن
وضو میں واجبات
چہرہ کی حد کہاں سے کہاں تک ہے اور داڑھی کے غسل کاحکم
گنجے سروالے آدمی کے چہرے کی حدود کاحکم
پیشانی کے اوپرکے حصہ میں بال نہ ہوں تووضومیں چہرہ کہاں تک دھوناچاہیے
عورت کے ناک،کان میں سوراخ ہوتووضومیں پانی پہنچاناضروری ہے یانہیں

         آگے پڑھئے