Select Language :

پورے سراورکانوں کامسح سنت مؤکدہ ہے:

سوال:    ایک مسجدکے حافظ صاحب صرف آدھے سرکامسح کرتے ہیں اورکانوں کی چاروں طرف انگلی نہیں پھراتے کہتے ہیں کہ یہ توسنت مؤکدہ ہے اس پربہت سے لوگوں نے ان کے پیچھے نمازپڑھنی ترک کردی ہے جب ان سے کہاگیاتونہیں مانے اورنمازانہوں نے نہیں دہرائی توان کے لیے کیاحکم ہے؟

الجواب حامداًومصلیاً

امام صاحب کاطہارت ونمازکے مسائل سے سب سے زیادہ واقف ہوناضروری ہے سنت مؤکدہ کے ترک ہوجانے سے فرض نمازاداہوجاتی ہے اس کادہراناواجب نہیں ہوتاہے لیکن مستقلًاسنت مؤکدہ کوترک کرنابھی کوئی ہلکی اورمعمولی چیزنہیں۔آئندہ ہمیشہ اس کاخیال رکھیں گذشتہ نمازوں کے دہرانے کی ضرورت نہیں پورے سرکااورکانوں کابھی مسح کریں اس کوترک نہ کریں۔فقط واللہ تعالیٰ اعلم

حررہ العبدمحمودغفرلہ دارالعلوم دیوبند(فتاویٰ محمودیہ:۵؍۵۱ (

کتب ورسائل

قرآن
حدیث
اسلامیات
سیرت رسولؐ
عقیدہ
فقہ
تصوف
تقریر

سوال/جواب

تمباکو کھانے کے بعد وضو:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
تمباکونوشی اورنسوارکشی سے وضوٹوٹتاہے یانہیں:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
وضوء کے فرائض وسنن
وضو میں واجبات
چہرہ کی حد کہاں سے کہاں تک ہے اور داڑھی کے غسل کاحکم
گنجے سروالے آدمی کے چہرے کی حدود کاحکم
پیشانی کے اوپرکے حصہ میں بال نہ ہوں تووضومیں چہرہ کہاں تک دھوناچاہیے
عورت کے ناک،کان میں سوراخ ہوتووضومیں پانی پہنچاناضروری ہے یانہیں

         آگے پڑھئے