Select Language :

مسواک مسنون کے فوائد کی تفصیل:

سوال:    علماء کرام سے سنا ہے کہ مسواک کرنا سنت ِ رسول صلی اللہ علیہ وسلم ہے ۔ اور اس کے فوائد کے بارے میں علما فرماتے ہیں کہ اس کے ستر فائدے ہیں اورجب شمار کرتے ہیں تو دو چار فوائد ہی بیان کرتے ہیں آگے کچھ نہیں فرماتے ۔ دوسرے فوائد کیا کیا ہیں۔

اسی طرح بعض کتب میں بھی جب مسواک کے فوائد کا بیان آتا ہے تو وہاں پر بھی چند ہی فوائد بیان کرتے ہیں ۔ تو عرض یہ ہے کہ اگر پورے ستر فوائد جو کہ بیان کئے جاتے ہیں کہیں ثابت ہوں تو باحوالہ پورے کے پورے ہی تحریر فرمائیں ۔ بینوا توجروا۔

المستفتی: قاری سیف اللہ خالد قادری، لاہور

الجواب

بلا شبہ مسواک میں بہت ہی فوائد ہیں ۔ عارف باللہ حضرت شیخ احمد زاہد رحمہ اللہ نے ان پر مستقل ایک تصنیف لکھی ہے ۔ جس کا نام ’’تحفۃ السلاک فی فضائل السواک ‘‘ ہے۔ علامہ سید احمد طحطاوی رحمہ اللہ نے ان میں سے تقریباً ساٹھ حاشیہ مراقی الفلاح میں نقل کئے ہیں جن میں سے خاص خاص یہ ہیں ۔

۱         مسواک کرنا اللہ تعالیٰ کی خوشنودی کا ذریعہ ہے ۔

۲       اس پر ہمیشگی کرنے سے غناء اور رزق میں وسعت پیدا ہوتی ہے ۔

۳         منہ خوشبو دار ہوجاتاہے۔

۴          بلغم کی زیادتی میں فائدہ مندہے۔

۵          اس سے دانت مضبوط ہوتے ہیں۔

۶          بینائی میں اضافہ ہوتاہے۔

۷          قوت فصاحت بڑھتی ہے۔

۸           اس کی مداومت بوقت ِ وفات شہادتین یاد دلاتی ہے۔

۹          لحد میں وحشت دور کرتی ہے۔

۱۰         اعمال کے ثواب کو بڑھاتی ہے ۔

پوری تفصیل کے لئے ملاحظہ فرمائیے’’طحطاوی‘‘ص۳۸۔فقط واللہ اعلم

احقر محمدانور عفا اللہ عنہ مفتی جامعہ خیرالمدارس ،ملتان ،۲؍۲؍۱۴۱۱ھ۔(خیر الفتاویٰ:۲؍۸۸۔۸۹ (

کتب ورسائل

قرآن
حدیث
اسلامیات
سیرت رسولؐ
عقیدہ
فقہ
تصوف
تقریر

سوال/جواب

تمباکو کھانے کے بعد وضو:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
تمباکونوشی اورنسوارکشی سے وضوٹوٹتاہے یانہیں:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
وضوء کے فرائض وسنن
وضو میں واجبات
چہرہ کی حد کہاں سے کہاں تک ہے اور داڑھی کے غسل کاحکم
گنجے سروالے آدمی کے چہرے کی حدود کاحکم
پیشانی کے اوپرکے حصہ میں بال نہ ہوں تووضومیں چہرہ کہاں تک دھوناچاہیے
عورت کے ناک،کان میں سوراخ ہوتووضومیں پانی پہنچاناضروری ہے یانہیں

         آگے پڑھئے