Select Language :

پیشانی کے اوپرکے حصہ میں بال نہ ہوں تووضومیں چہرہ کہاں تک دھوناچاہیے

سوال:    ایک شخص کے سرکے اگلے حصہ میں بالکل بال نہیںہیں، تقریباًنصف سرکے بعدبال ہیں وضومیںاسے چہرہ کہاںتک دھوناچاہیے،عرف میں جسے پیشانی کہتے ہیں وہاں تک دھوناکافی ہے یا جہاں سے بال اگناشروع ہوں وہاں تک دھوناضروری ہے؟بینواتوجروا۔

الجواب

عام طورپرجہاں سے سرکے بال اگتے ہیں اورجسے عرف میں پیشانی کہتے ہیں اتنے حصے کادھونافرض ہے اس سے اوپرتک دھونافرض نہیں ہے،مراقی الفلاح میں ہے:

’’(وحدہ) أی جملۃ الوجہ( طولاًمن مبدأ سطح الجبھۃ)سواء کان بہ شعرأم لا.

طحطاوی میں ہے:

’’(قولہ سواء کان بہ شعرأم لا)أشاربہ إلیٰ أن الأغم والأصلع والأقرع والأنزع فرض غسل الوجہ منھم ماذکر‘‘۔

عمدۃالفقہ میں ہے:

 اگرکسی کے بال آدھے سرتک اگلی طرف سے نہ اگیں توعرف میں جہاں تک پیشانی کہلاتی ہواس سے اوپرتک دھونافرض نہیں بلکہ پیشانی کے بالوں کے اگنے کی معروف جگہ تک دھونافرض ہے،اسی قول پرفتوی ہے،الخ۔(عمدۃالفقہ :۱؍۹۳)فقط واللہ اعلم بالصواب(فتاویٰ رحیمیہ:۸؍۹۰؍۹۱)

کتب ورسائل

قرآن
حدیث
اسلامیات
سیرت رسولؐ
عقیدہ
فقہ
تصوف
تقریر

سوال/جواب

تمباکو کھانے کے بعد وضو:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
تمباکونوشی اورنسوارکشی سے وضوٹوٹتاہے یانہیں:
شراب پینے کے بعدنشہ آجائے تووضوٹوٹ جاتاہے:
وضوء کے فرائض وسنن
وضو میں واجبات
چہرہ کی حد کہاں سے کہاں تک ہے اور داڑھی کے غسل کاحکم
گنجے سروالے آدمی کے چہرے کی حدود کاحکم
پیشانی کے اوپرکے حصہ میں بال نہ ہوں تووضومیں چہرہ کہاں تک دھوناچاہیے
عورت کے ناک،کان میں سوراخ ہوتووضومیں پانی پہنچاناضروری ہے یانہیں

         آگے پڑھئے